Payas Woh Dil Ki Bujhanay Kabhi Aaya Bhi Nahin | Urdu Poetry by Qateel Shifai




Pyas Wo Dil Ki Bujhane Kabhi Aaya Bhi Nahin,
Kaisa Badal Hai Jiska Koi Saaya Bhi Nahin,

Berukhi Is Se Barhi Aur Bhala Kya Hogi,
Ek Muddat Se Hamein Us Ne Sataaya Bhi Nahin,

Roz Aata Hai Dar-E-Dil Pe Wo Dastak Dene,
Aaj Tak Hamne Jise Paas Bulaaya Bhi Nahin,

Sun Liya Kaise Khuda Jane Zamane Bhar Ne,
Wo Fasana Jo Kabhi Hamne Sunaaya Bhi Nahin,

Tum To Shayar Ho `Qateel` Aur Wo Ik Aam Sa Shakhs,
Us Ne Chaha Bhi Tujhe Aur Jataaya Bhi Nahin.

Poet: Qateel Shifai
Voice: Imran Sherazi

پیاس وہ دل کی بجھانے کبھی آیا بھی نہیں 
کیسا بادل ہے جسکا کوئی سایہ بھی نہیں 

بے رخی اس سے بڑی اور بھلا کیا ہوگی 
ایک مدت سے ہمیں اس نے ستایا بھی نہیں 

روز آتا ہے در دل پہ وہ دستک دینے 
آج تک ہم نے جسے پاس بلایا بھی نہیں 

سن لیا کیسے خدا جانے زمانے بھر نے 
وہ فسانہ جو کبھی ہم نے سنایا بھی نہیں 

تم تو شاعر ہو قتیل اور وہ اک عام سا شخص 
اس نے چاہا بھی تجھے اور جتایا بھی نہیں

شاعر: قتیل شفائی
آواز: عمران شیرازی


No comments :

No comments :

Post a Comment