Kya Lage Aankh Ke Phir Dil Mein Samaya Koi | Urdu Poetry by Nasir Kazmi with Lyrics




Kya Lage aankh ke phir dil mein samaya koi
raat bhar phirta hai is shehr mein saaya koi

fikar yeh thi ke shab e hijar katay gi kaisay
lutf yeh hai ke humein yaad na aaya koi

shoq yeh tha ke mohabbat mein jalein ge chup chaap
ranj yeh hai ke tamasha na dikhaya koi

shehar mein hamdam dereena bohat thay Nasir
waqt parne pe mere kaam na aaya koi

Poet: Nasir Kazmi
Voice: Imran Sherazi

آر جے عمران شیرازی کی آواز میں اردو شاعری

کیا لگے آنکھ کہ پھر دل میں سمایا کوئی
رات بھر پھرتا ہے اس شہر میں سایا کوئی

فکر یہ تھی کہ شب ہجر کٹے گی کیوں کر
لطف یہ ہے کہ ہمیں یاد نہ آیا کوئی

شوق یہ تھا کہ محبت میں جلیں گے چپ چاپ
رنج یہ ہے کہ تماشہ نہ دکھایا کوئی

شہر میں ہمدم دیرینہ بہت تھے ناصرؔ
وقت پڑنے پہ میرے کام نہ آیا کوئی

شاعر: ناصر کاظمی
آواز: عمران شیرازی


No comments :

No comments :

Post a Comment