Mohabbat Kar Chuka Hoon Mein | Urdu Poetry with Lyrics




Suno! 
qisa sunata hoon
tumhein ik such batata hoon
mohabbat kab hui mujh ko
tumhein aaghaz e chahat mein
meri ghalti batata hoon
mein toota dil liye ik din
mohabbat bhool k ik din
yeh samjha mein mukamal hoon
achanak ik pari chehra
nazar k samnay guzra
meri aankhon ke rastay woh
mere andar kahin utra
mein kaisay maan laita k
woh meri jaan lay lay gi
mujhe iss rah par chalne pe
phir majboor kar de gi
woh rastay kab k band kar k
mein to bhool betha tha
mohabbat k sabhi mausam
kahin par chhor aaya tha
woh chehra ik din jatay hue
kuch iss tarah palta
mujhe wo pal na bhoolay ga
jahan par jaan nikli thi
mohabbat laut k aayi
wo rastay khul gaye jaisay
phir us ne aik din mujh ko batlaya
k zindagi kya hai
meri takmeel ki us ne
mohabbat sikha k woh
samjhanay lagi mujh ko
yeh ghalti mat kabhi karna
mohabbat dard hai dil ka
wo pagli yeh nahin samjhi
mohabbat k sabhi chehre
khushi k gham k sab lamhe
usi k naam pe kar k
yeh ghalti kar chuka hoon mein
mohabbat kar chuka hoon main

Poet: Unknown
Voice: Imran Sherazi

سُنو_!!!
؎
قِصّہ سُناتا ہوں 
تُمہیں اِک سچ بتاتا ہوں 
محبت کب ہوئی مجھ کو
تُمہیں آغازِ چاہت میں 
میری غلطی بتاتا ہوں 
میں ٹُوٹا دِل لیے اِک دن 
مُحبّت بھول کے اک دن 
یہ سمجھا میں مکمل ہوں 
اچانک اِک پری چہرہ____
نظر کے سامنے گُزرا،،،،،،،،،،
میری آنکھوں کے رستے وہ
میرے اندر کہیں اُترا_____
میں کیسے جان لیتا کہ 
وہ میری جان لے لے گی
مجھے اس راہ پر چلنے پہ
پھر مجبور کر دے گی
وہ رستے کب کے بند کر کے
میں تو بھول بیٹھا تھا_____
مُحبّت کے سبھی موسم 
کہیں پر چھوڑ آیا تھا______
وہ چہرہ اک دن جاتے ہوئے
کچھ اس طرح پلٹا______
مجھے وہ پَل نہ بھولے گا
جہاں پر جان نکلی تھی
مُحبّت لوٹ کے آئی_____
وہ رستے کُھل گئے جیسے
پھر اس نے ایک دن مجھ کو بتلایا
زندگی کیا ہے____،،،،،،،
میری تکمیل کی اس نے
مُحبّت سکھا کے وہ 
سمجھانے لگی مجھ کو
یہ غلطی مت کبھی کرنا 
مُحبّت درد ہے دل کا 
وہ پگلی یہ نہیں سمجھی
مُحبّت کے سبھی چہرے
خوشی کے غم کے سب لمحے
اسی کے نام پہ کر کے_______
یہ غلطی کر چکا ہوں میں
مُحبّت کر چکا ہوں میں 
مُحبّت کر چکا ہوں میں__!!!!!

شاعر: نامعلوم
آواز: عمران شیرازی


No comments :

No comments :

Post a Comment