Zainab Hum Sharminda Hein | Justice for Zainab | Urdu Poetry with Lyrics




Neeli Aankhon wali guriya
hum tujh se sharminda hein

maa teri to roz maray gi
qatim jab tak zinda hein

hum iss qoum ke ghafil log
sab hi jawab dehinda hein

tujh par jo beeti hai us par
Zainab Hum sharminda hein

Poet: Unknown
Voice: Imran Sherazi

نیلی آنکھوں والی گڑیا
ہم تجھ سے شرمندہ ہیں

ماں تیری تو روز مرے گی
قاتل جب تک زندہ ہیں

ہم اس قوم کے غافل لوگ
سب ہی جواب دہندہ ہیں

تجھ پر جو بیتی ہے اُس پر
زینب ہم شرمندہ ہیں

شاعر: نامعلوم
آواز: عمران شیرازی


No comments :

No comments :

Post a Comment