Top Five best bowling figures in Pakistan Super League | Top 5 bowling performances in PSL | Cricket Info by Imran Sherazi

Ravi Bopara (Karachi Kings) 
Overs- 4.0
Maidens- 0
Runs- 16
Wickets- 6

Shahid Afridi (Peshawar Zalmi) 
Overs- 4.0
Maidens- 1
Runs- 7
Wickets- 5

Mohammad Sami (Islamabad United) 
Overs- 4.0
Maidens- 0
Runs- 8
Wickets- 5

Yasir Shah (Lahore Qalandars) 
Overs- 4.0
Maidens- 0
Runs- 7
Wickets- 4

Mohammad Nawaz (Quetta Gladiators) 
Overs- 4.0
Maidens- 0
Runs- 13
Wickets- 4


Best Bowling Performances in Pakistan Super League | Top 5 Figures in PSL | Cricket Info




Ibne Insha Shayari | Kal Chaudhvin Ki Raat Thi Shab Bhar Raha Charcha Tera - Urdu/ Hindi Poetry (Ghazal) with Lyrics by R J Imran Sherazi

kal chaudhvin ki raat thi shab bhar raha charcha tera
kuch ne kaha yeh chand hai kuch ne kaha chehra tera

hum bhi wohen mojood thay hum se bhi sab poocha kiye
hum hans diye hum chup rahay manzoor tha pardah tera

iss shehar mein kis se milein hum se to chhooti mehfilein
har shakhs tea naam le har shakhs dewana tera

kuchay ko tere chhor ke jogi hi ban jain magar
jungle tere parbat tere basti teri sehra tera

tu bawafa tu mehrban hum aor tujh se bad guman
hum ne to poocha tha zara yeh sasf kiyon thera tera

beshak isi ka dosh hai kehta nahin khamosh hai
tu aap kar aisi dawa bemar ho acha tera

hum aor rasm e bandgi aashuftagi uftaadagi
ehsaan hai kya kya tera aye husn-e-beparwah tera

do ashk janay kiss liye palkon pe aa kar tik gaye
altaf ki barish teri ikram ka dariya tera

aye be darigh o be amaan hum ne kabhi ki hai fughan
hum ko teri wehshat sahi hum ko sahi sauda tera

hum par yeh sakhti ki nazar hum hein faqir e rehguzar
rasta kabhi roka tera daman kabhi thama tera

haan haan teri soorat haseen laiken tu aisa bhi nahin
ik shakhs ke ishaar se shohra hua kya kya tera

bedard sunni ho to chal kehta hai kya achi ghazal
aashiq tera ruswa tera shaair tera Insha tera

Poet: Ibne Insha
Voice: Imran Sherazi


آر جے عمران شیرازی کی آواز میں اردو شاعری

کل چودھویں کی رات تھی، شب بھر رہا چرچا تیرا 
کچھ نے کہا یہ چاند ہے، کچھ نے کہا چہرا تیرا 
ہم بھی وہیں موجود تھے، ہم سے بھی سب پُوچھا کیے 
ہم ہنس دیئے، ہم چُپ رہے، منظور تھا پردہ تیرا 
اس شہر میں کِس سے مِلیں، ہم سے تو چُھوٹیں محفلیں 
ہر شخص تیرا نام لے، ہر شخص دیوانہ تیرا 
کُوچے کو تیرے چھوڑ کے جوگی ہی بن جائیں مگر 
جنگل تیرے، پربت تیرے، بستی تیری، صحرا تیرا 
تُو باوفا، تُو مہرباں، ہم اور تجھ سے بدگماں؟ 
ہم نے تو پوچھا تھا ذرا، یہ وصف کیوں ٹھہرا تیرا 
بے شک اسی کا دوش ہے، کہتا نہیں خاموش ہے 
تو آپ کر ایسی دوا، بیمار ہو اچھا تیرا 
ہم اور رسمِ بندگی؟ آشفتگی؟ اُفتادگی؟ 
احسان ہے کیا کیا تیرا، اے حسنِ بے پروا تیرا 
دو اشک جانے کِس لیے، پلکوں پہ آ کر ٹِک گئے 
الطاف کی بارش تیری اکرام کا دریا تیرا 
اے بے دریغ و بے اَماں، ہم نے کبھی کی ہے فغاں؟ 
ہم کو تِری وحشت سہی ، ہم کو سہی سودا تیرا 
ہم پر یہ سختی کی نظر، ہم ہیں فقیرِ رہگُزر 
رستہ کبھی روکا تیرا دامن کبھی تھاما تیرا 
ہاں ہاں تیری صورت حسیں، لیکن تُو ایسا بھی نہیں 
اس شخص کے اشعار سے شہرہ ہوا کیا کیا تیرا 
بے درد، سننی ہو تو چل، کہتا ہے کیا اچھی غزل 
عاشق تیرا، رُسوا تیرا، شاعر تیرا، اِنشا تیرا

شاعر: ابن انشاء
آواز: عمران شیرازی


Kal Chaudhvin Ki Raat Thi Shab Bhar Raha Charcha Tera | Urdu Poetry by Ibne Insha




Highest Individual Scores in T20 International Cricket | Cricket Info by Imran Sherazi

Sharjeel Khan (Islamabad United) 
Runs- 117
Balls-62
4s-12
6s-8

Kamran Akmal (Peshawar Zalmi)
Runs- 104
Balls-65
4s- 6
6s- 7

Umar Akmal (Lahore Qalandars)
Runs- 93
Balls-40
4s- 6
6s- 8

Kamran Akmal (Peshawar Zalmi)
Runs- 88
Balls-48
4s- 6
6s- 6

Kevin Pietersen (Quetta Gladiators)
Runs- 88*
Balls-42
4s- 3
6s- 8


Highest Individual Scores in Pakistan Super League | Top 5 Innings in PSL | Cricket Info



Kuj shoq si yaar faqeeri da​
Kuj ishq ne dar dar rol dita​
Kuj sajna kasar na chori si​
Kuj zeher raqeeban ghol dita​
Kuj hijar firaq da rang chareya​
Kuj dard mahi anmol dita​
Kuj sarr gai qismat v meri​
Kuj peyar vich yaaran rol dita​
Kuj onj v rahwan okhiyan san​
Kuj gal vich ghaman da toq v si....​
Kuj sheher de log v zalam san​
Kuj sanu maran da shoq v si...!!!​

Poet: Munir Niazi
Voice: Imran Sherazi

کج شوق سی یار فقیری دا
کچ عشق نے در در رول دتا

کج ساجن کسر نہ چھوڑی سی
کج زہر رقیباں گھول دتا

کج ہجر فراق دا رنگ چڑھیا
کج درد ماہی انمول دتا

کج سڑ گئی قسمت بد قسمت دی
کج پیار وچ جدائی رول دتا

کج اونج وی راہواں اوکھیاں سن
کج گل وچ غماں دا طوق وی سی
کچھ شہر دے لوگ وی ظالم سن
کچھ سانوں مرن دا شوق وی سی

شاعر: منیر نیازی
آواز: عمران شیرازی


Kuj Shoq Si Yaar Faqeeri Da | Punjabi Poetry by Munir Niazi




Ranj-e-Firaq Yaar Mein Ruswa Nahin Hua
Itna mein chup hua ke tamasha nahin hua

aisa safar hai jis mein koi hamsafar nahin
rasta hai iss tarah ka ke dekha nahin hua

mushkil hua hai rehna humein is diyar mein
barson yahan rahay hein yeh apna nahin hua

woh kaam shah-e-shehar se ya shehar se hua
jo kaam bhi hua yahan acha nahin hua

milna tha aik baar usay phir kahin Munir
aisa mein chahta tha par aisa nahin hua

Poet: Munir Niazi
Voice: Imran Sherazi

آر جے عمران شیرازی کی آواز میں اردو شاعری

رنج فراق یار میں رسوا نہیں ہوا
اتنا میں چپ ہوا کہ تماشہ نہیں ہوا

ایسا سفر ہے جس میں کوئی ہمسفر نہیں
رستہ ہے اس طرح کا کہ دیکھا نہیں ہوا

مشکل ہوا ہے رہنا ہمیں اس دیار میں
برسوں یہاں رہے ہیں یہ اپنا نہیں ہوا

وہ کام شاہ شہر سے یا شہر سے ہوا
جو کام بھی ہوا یہاں اچھا نہیں ہوا

ملنا تھا ایک بار اسے پھر کہیں منیر
ایسا میں چاہتا تھا پر ایسا نہیں ہوا

شاعر: منیر نیازی
آواز: عمران شیرازی


Munir Niazi Poetry | Ranj e Firaq Yaar Mein Ruswa Nahin Hua | Urdu Poetry with Lyrics





ab bhala chhor ke ghar kya kartay
sham ke waqt safar kya kartay

teri masroofiyatein jantay hein
apnay aanay ki khabar kya kartay

jab sitare hi mil nahin paaye
le ke hum shams o qamar kya karte

woh musafir hi khuli dhoop ka tha
saaye phaila ke shajar kya karte

khaak hi awal o aakhir theri
kar ke zaray ko gohar kya karte

raaye pehlay hi bana li tum ne
dil mein ab hum tere ghar kya karte 

Poetry: Parveen Shakir
Voice: Imran Sherazi

آر جے عمران شیرازی کی آواز میں اردو شاعری 

اب بھلا چھوڑ کے گھر کیا کرتے
شام کے وقت سفر کیا کرتے

تیری مصروفیتیں جانتے ہیں
اپنے آنے کی خبر کیا کرتے

جب ستارے ہی مل نہیں پائے
لے کے ہم شمس و قمر کیا کرتے

وہ مسافر ہی کھلی دھوپ کا تھا
سائے پھیلا کے شجر کیا کرتے

خاک ہی اول و آخر ٹھہری
کر کے ذرے کو ہم گوہر کیا کرتے

رائے پہلے ہی بنا لی تم نے
دل میں اب ہم تیرے گھر کیا کرتے

شاعرہ: پروین شاکر
آواز: عمران شیرازی


Ab Bhala Chhor Ke Ghar Kya Karte | Urdu Poetry by Parveen Shakir




Har Koi Dil Ki Hatheli Pay Hai Sehra Rakhe
Kis Ko Sairaab Kare Wo Kise Pyasa Rakhe

Umar Bhar Kaun Nibhata Hai Ta’lluq Itna
Ai Meri Jaan Ke Dushman Tujhe Allah Rakhe

Hum Ko Acha Nahin Lagta Koi Hum Nam Tera
Koi Tujh Sa Ho Tu Pir Nam Bhi Tera Rakhe

Dil Bhi Pagal Hai Ke Us Shakhs Se Waabasta Hai
Kisi Aur Ka Hone De Na Apnaa Rakhe

Kam Nahin Tuma Ebadat Bhi To Hirs-E-Zar Se
Fuqr To Wo Hai Ke Jo Deen Na Duniya Rakhe

Huns Na Itna Bhi Faqeeroon Ke Akele-Pan Par
Ja Khuda Meri Tarah Tujh Ko Bhi Tanha Rakhe

Ye Qinna'at Hai Ata'at Hai Ke Chaahat Hai ‘Faraz’
Hum To Raazi Hain Wo Jis Haal Main Jaisa Rakhe

Poet: Ahmad Faraz
Voice: Imran Sherazi

ﮨﺮ ﮐﻮﺋﯽ ﺩﻝ ﮐﯽ ہتھیلی ﭘﮧ ﮨﮯ ﺻﺤﺮﺍ ﺭﮐﮭﮯ
ﮐﺲ ﮐﻮ ﺳﯿﺮﺍﺏ ﮐﺮﮮ ﮐﺴﮯ ﭘﯿﺎﺳﺎ ﺭﮐﮭﮯ

ﻋﻤﺮ ﺑﮭﺮ ﮐﻮﻥ ﻧﺒﮭﺎﺗﺎ ﮨﮯ ﺗﻌﻠﻖ ﺍﺗﻨﺎ
ﺍﮮ ﻣﯿﺮﯼ ﺟﺎﻥ ﮐﮯ ﺩﺷﻤﻦ ﺗﺠﮯ ﺍﻟﻠﮧ ﺭﮐﮭﮯ

ﮨﻢ ﮐﻮ ﺍﭼﮭﺎ ﻧﮩﯿﮟ ﻟﮕﺘﺎ ﮐﻮﺋﯽ ﮬﻢ ﻧﺎم ﺗﺮﺍ
ﮐﻮﺋﯽ ﺗﺠﮫ ﺳﺎ ﮨﻮ ﺗﻮ ﻧﺎﻡ ﺑﮭﯽ ﺗﺠﮫ ﺳﺎ ﺭﮐﮭﮯ

ﺩﻝ ﺑﮭﯽ ﭘﺎﮔﻞ ﮨﮯ ﮐﮧ ﺍﺱ ﺷﺨﺺ ﺳﮯ ﻭﺍﺑﺴﺘﮧ ﮨﮯ
جوﮐﺴﯽ ﺍﻭﺭ ﮐﺎ ﮨﻮﻧﮯ ﺩﮮ ﻧﮧ ﺍﭘﻨﺎ ﺭﮐﮭﮯ

ﮨﻨﺲ ﻧﮧ ﺍﺗﻨﺎ ﺑﮭﯽ ﻓﻘﯿﺮﻭﮞ ﮐﮯ ﺍﮐﯿﻠﮯ ﭘﻦ ﭘﺮ
ﺟﺎ، ﺧﺪﺍ ﻣﯿﺮﯼ ﻃﺮﺡ ﺗﺠﮫ ﮐﻮ ﺑﮭﯽ ﺗﻨﮩﺎ ﺭﮐﮭﮯ

ﯾﮧ ﻗﻨﺎﻋﺖ ﮨﮯ ﺍﻃﺎﻋﺖ ﮨﮯ ﮐﮧ ﭼﺎﮨﺖ ﮨﮯ ﻓﺮﺍﺯ
ﮨﻢ ﺗﻮ ﺭﺍﺿﯽ ﮨﯿﮟ ﻭﮦ ﺟﺲ ﺣﺎﻝ ﻣﯿﮟ ﺟیسا ﺭﮐﮭﮯ

شاعر: احمد فراز
آواز: عمران شیرازی


Har Koi Dil Ki Hatheli Pe Hai Sehra Rakhe | Ahmed Faraz Urdu Poetry





Sad Punjabi Poetry | Waris Shah Kalam | Bara Ishq Ishq Tu Karna Ain - Urdu Poetry with Lyrics by R J Imran Sherazi

Bada ishq ishq tu karna ain,
Kadi ishq da gunjal khol te sai
Tenu mitti vich na rol devay
Do pyar de bol bol te sai

Sukh ghat te dard hazaar milan
Kadi ishq nu takri tol te sai
Teri hasdi akh v pujh javay
Kadi sanu andron phol te sai

Tere pyar wich jind rol devan
Tu smajh menu Anmol te sai

Poet: Waris Shah
Voice: Imran Sherazi

آر جے عمران شیرازی کی آواز میں پنجابی شاعری

بڑا عشق عشق تو کرناں ایں
کدی عشق دا گنجل کھول تے سئی
تینوں مٹی دے وچ نہ رول دیوے
دو پیار دے بول بول تے سعی
سکھ گھٹ تے درد ہزار ملن
کدی عشق نوں تکڑی تول تے سعی
تیری ہسدی اکھ وی پجھ جاوے
کدی سانوں اندروں پھول تے سئی

شاعر: وارث شاہ
آواز: عمران شیرازی


Bara Ishq Ishq Tu Karna Ain | Punjabi Poetry by Waris Shah




dil ne socha tha usay toot ke chahen ge
such mano! toote bhi bohat aor chaha bhi bohat

mujhe chhor kar woh khush hai to shikayat kaisi
ab mein usay khush bhi na dekhun to mohabbat kaisi

chhor diya hum ne hamesha k liye us ki aarzu karna
jis ko mohabbat ki qadar na ho us ko duaon mein kya mangna

mohabbat aor mout ki pasand to dekho
aik ko dil chahie aor doosre ko dharkan

taskeen e mohabbat k faqat do hi tareeqe thay
ya dil na bana hota ya tum na bane hotay

nazar se door ho kar bhi yeh tera rubaru rehna
kisi k pass rehnay ka saleeqa ho to aisa ho

sari dunya ki mohabbat se kinara kar ke
hum ne rakha hai faqat khud ko tumhara kar k

dua karna dam bhi isi tarah nikle
jis tarah tere dil se hum nikle

ik yeh khawaish k koi zakham na dekhe dil ka
ik yeh hasrat k koi dekhne wala hota

rah takte hue jab thak gayi aankhen meri
phir use dhoondhne meri aankh k aansu nikle

aye buray waqt zara adab se paish aa
waqt nahin lagta waqt badlne mein

mohabbatein aor bhi barh jati hein juda hone se
tum sirf meri ho is baat ka khiyal rakhna

rooth jane ki ada hum ko bhi aati hai
kash hota koi hum ko bhi manane wala

nahin pasand mohabbat mein milawat mujh ko
agar woh mera hai to khawab bhi mere dekhay

koi shikwah nahin tum se agar ho bhi to kya hasil
wohi rasmi sa ik jumla meri majbooriyan samjho

chalo ik aor dunya mein tumhare saath chalte hein
jahan halaat kuch bhi hon magar hum sath rehte hon

mujhe acha lagta hai tera naam apne naam k sath
jaisay subha juri ho kisi haseen sham k sath

tujh se karta hoon mulaqat simatne k liye
tujh se milta hoon to kuch aor bikhar jaata hoon

Voice: Imran Sherazi

دل نے سوچا تھا اسے ٹوٹ کے چاہیں گے
سچ مانو ٹوٹے بھی بہت چاہا بھی بہت

مجھے چھوڑ کر وہ خوش ہے تو شکایت کیسی
اب میں اسے خوش بھی نہ دیکھوں  تو محبت کیسی

چھوڑ دیا ہم نے ہمیشہ کے لیے اس کی آرزو کرنا
جس کو محبت کی قدر نہ اس کو دعاوں میں کیا مانگنا

محبت اور موت کی پسند تو دیکھو
ایک کو دل چاہیئے اور دوسرے کو دھڑکن

تسکین محبت کے فقط دو ہی طریقے تھے
یا دل نہ بنا ہوتا یا تم نہ بنے ہوتے

نظر سے دور ہو کر بھی یہ تیرا روبرو رہنا
کسی کے پاس رہنے کا سلیقہ ہو تو ایسا ہو

ساری دنیا کی محبت سے کنارہ کر کے
ہم نے رکھا ہے فقط خود کو تمھارا کر کے

دعا کرنا دم بھی اسی طرح نکلے
جس طرح تیرے دل سے ہم نکلے

اک یہ خواہش کہ کوئی زخم نہ دیکھے دل کا
اک یہ حسرت کہ کوئی دیکھنے والا ہوتا

راہ تکتے ہوئے جب تھک گئی آنکھیں میری
پھر اسے ڈھونڈنے میری آنکھ سے آنسو نکلے

اے برے وقت ذرا ادب سے پیش آ
وقت نہیں لگتا وقت بدلنے میں

محبتیں اور بھی بڑھ جاتی ہیں جدا ہونے سے
تم صرف میری ہو اس بات کا خیال رکھنا

روٹھ جانے کی ادا ہم کو بھی آتی ہے
کاش ہوتا کوئی ہم کو بھی منانے والا

نہیں پسند محبت میں ملاوٹ مجھ کو
اگر وہ میرا ہے تو خواب بھی میرے دیکھے

کوئی شکوہ نہیں تم سے اگر ہو بھی تو کیا حاصل
وہی رسمی سا اک جملہ میری مجبوریاں سمجھو

چلو اک اور دنیا میں تمھارے ساتھ چلتے ہیں
جہاں حالات کچھ بھی ہوں مگر ہم ساتھ رہتے ہوں

مجھے اچھا لگتا ہے تیرا نام اپنے نام کے ساتھ
جیسے صبح جڑی ہو کسی حسیں شام کے ساتھ

تجھ سے کرتا ہوں ملاقات سمٹنے کے لیے
تجھ سے ملتا ہوں تو کچھ اور بکھر جاتا ہوں

آواز: عمران شیرازی

2 Lines Shayari | Two Lines Sad Urdu Poetry by RJ Imran Sherazi | Part 1




Behlol or bahlool was a common name Wahab ibne Amr. He Lived in the era of Caliph Haroon ur Rasheed. Behlol was well known as a Judge and Scholar from a wealthy background.

Voice: Imran Sherazi

خلیفہ ہارون الرشید کے دور میں بغداد میں ایک درویش رہتے تھے۔ان درویش کا نام بہلول دانا تھا ۔بہلول دانا بیک وقت ایک فلاسفر اور ایک تارک الدنیا درویش تھے ۔ان کا کوئی گھر ،کوئی ٹھکانہ نہیں تھا ۔وہ عموما شہر میں ننگے پاؤں پھرتے تھے اور جس جگہ تھک جاتے وہیں ڈیرہ ڈال لیتے۔ بعض لوگوں نے انہیں مجذوب لکھا ہے۔ کہ یہ اللہ کی تجلیات اور عشق میں مستغرق اور گم رہتے تھے۔اور اپنے اردگرد کے ماحول سے بے خبر ہوتے تھے۔ بہت کم لوگوں کی طرف التفات کرتے تھے۔ اور جب کبھی عوام الناس کی طرف منہ کرتے تو حکمت و دانائی کی بہت ہی عجیب و غریب باتیں کرتے۔ جس سے پتہ چلتا ہے کہ یہ اللہ کے بہت بڑے ولی کامل تھے ۔ ان کا ا صل نام وہب بن عمرو تھا۔
آواز: عمران شیرازی


Behlol Dana Aor Jannat Ka Mahal | Islamic Urdu Story





asi lakh namazan nitiyan, asi sajde keetay lakh
kadi tibiyan raitan roliyan, kadi galiyan de which kakh
asen pakhu wichre daar tu, asi apnay aap tu wakh
asi waikhaya dil makhlooq da, dil buhe buhe rakh

asi ratan katiyan jaag ke, lag bariyan naal khalo
sadi akhein rastyan sariyan, dil dita dard paro
saday sah which sabar di chashni, sadi ragan which khushbo
sathon haar k saday hosle, paye kadan nap nap ro

asi ghabru sikday shehar de, saday khaban naal widan
asi khali khokhe zaat de, sanu chunjan maran kaan
asi mausam kache ishq de, sadi dhup bane na chhan
saday mathay bharay lakeer de, sadi qismat mool na thhan

asi mujrim ishq de jurm de, asi sufnay laye udeek
sathay lagan roz adaaltan, sanu pay jaye roz tareekh
nit aasan la la bethiye, nit dil tay mariye leek
kadi chhickay chan asmaan te, kadi mitti laway dhareek

asi jamdiyan naal de ghabray, asi qismat naal khafa
kadi patharan de which khaidde, kadi turde dhoor udda
asi bholay waang kabootaran, asi pagal waang hawa
asi apnay aap ibadati, asi apnay aap khuda

Poet: Farhat Abbas Shah
Voice: Imran Sherazi

جِیندے جاگدے لوک

اسیں لکھ نمازاں نیتیاں، اسیں سجدے کیتے لکھ
کدیں ٹبیاں ریتاں رولیاں ، کدیں گلیاں دے وچ کَکھ
اسیں پَکھو وِچھڑے ڈار توں، اسیں اپنے آپ توں وَکھ
اسیں ویکھیا دِل مخلوق دا، دِل بُوہے بُوہے رَکھ

اسیں راتاں کٹیاں جگ کے، لگ باریاں نال کھلو
ساڈی اکھیں رستیاں ساڑیاں، دل دِتّا دَرد پَرو
ساڈی ساہ وِچ صبر دی چاشنی، ساڈی رگاں وچ خشبو
ساتھوں ہار کے ساڈے حوصلے، پئے کدّگاں نَپ نَپ رو

اسیں گھبرُو سِک دے شہر دے، ساڈے خاباں نال وِداں 
اسیں خالی کھوکھے ذات دے، سانوں چُنجاں مارن کاں
اسیں موسم کچّے عشق دے، ساڈی دُھپ بنے نا چھاں
ساڈے متھّے بھرے لکیر دے، ساڈی قسمت مُول نا تھاں

اسیں مجرم عشق دے جُرم دے، اسیں سُفنے لَے اُڈیک
ساتھے لگّن روز عدالتاں، سانوں پئے جَئے روز تَریک 
نِت آساں لا لا بیٹھیئے ، نِت دِل تے مارئیے لیک
کدیں چھِکّے چَن اَسمان تے، کدیں مِٹّی لَوے دَھریک

اسیں جمدیاں نال دے گھابرے، اسیں قسمت نال خفا
کدیں پتھراں دے وچ کھیڈدے، کدیں ٹُردے دُھوڑ اُڈا
اسیں بھولے وانگ کبوتراں ، اسیں پاگل وانگ ہوا
اسیں اپنے آپ عبادتی، اسیں اپنے آپ خدا

شاعر: فرحت عباس شاہ
آواز: عمران شیرازی


Asi Lakh Namazan Nitiyan | Punjabi Poetry by Farhat Abbas Shah





Is Ka Socha Bhi Na Tha Ab Ke Jo Tanha Guzri,
Wo Qayamat Hi Ghaneemat Thi Jo Yakja Guzri,

Aa Galay Tujh Ko Laga Loon Mere Piyare Dushman,
Ik Meri Baat Nahi, Tujh Pay Bhi Kya Kya Guzri,

Main To Sehra K Tapish, Tishna Labi Bhool Gaya,
Jo Mere Hum_Nafson Pay Lab_e_Dariya Guzri,

Aaj Kya Dekh K Bhar Aai Hain Aankhein Teri,
Hum Pay Ay Dost Ye Saa'at To Humesh Guzri,

Meri Tanha Safri Mera Muqaddar Thi Faraz,
Warna Is Sheher_e_Tamanna Say To Duniya Guzri

Poet: Ahmad Faraz
Voice: Imran Sherazi

اِس کا سوچا بھی نہ تھا اب کے جو تنہا گزری
وہ قیامت ہی غنیمت تھی جو یکجا گزری

آ گلے تجھ کو لگا لوں میرے پیارے دشمن
اک مری بات نہیں تجھ پہ بھی کیا کیا گزری

میں تو صحرا کی تپش، تشنہ لبی بھول گیا
جو مرے ہم نفسوں پر لب ِدریا گزری

آج کیا دیکھ کے بھر آئی ہیں تیری آنکھیں
ہم پہ اے دوست یہ ساعت تو ہمیشہ گزری

میری تنہا سفری میرا مقدر تھی فراز
ورنہ اس شہر ِتمنا سے تو دنیا گزری

شاعر: احمد فراز
آواز: عمران شیرازی


Iska Socha Bhi Na tha Ab Ke Jo Tanha Guzri | Urdu Poetry by Ahmad Faraz