Iska Socha Bhi Na tha Ab Ke Jo Tanha Guzri | Urdu Poetry by Ahmad Faraz





Is Ka Socha Bhi Na Tha Ab Ke Jo Tanha Guzri,
Wo Qayamat Hi Ghaneemat Thi Jo Yakja Guzri,

Aa Galay Tujh Ko Laga Loon Mere Piyare Dushman,
Ik Meri Baat Nahi, Tujh Pay Bhi Kya Kya Guzri,

Main To Sehra K Tapish, Tishna Labi Bhool Gaya,
Jo Mere Hum_Nafson Pay Lab_e_Dariya Guzri,

Aaj Kya Dekh K Bhar Aai Hain Aankhein Teri,
Hum Pay Ay Dost Ye Saa'at To Humesh Guzri,

Meri Tanha Safri Mera Muqaddar Thi Faraz,
Warna Is Sheher_e_Tamanna Say To Duniya Guzri

Poet: Ahmad Faraz
Voice: Imran Sherazi

اِس کا سوچا بھی نہ تھا اب کے جو تنہا گزری
وہ قیامت ہی غنیمت تھی جو یکجا گزری

آ گلے تجھ کو لگا لوں میرے پیارے دشمن
اک مری بات نہیں تجھ پہ بھی کیا کیا گزری

میں تو صحرا کی تپش، تشنہ لبی بھول گیا
جو مرے ہم نفسوں پر لب ِدریا گزری

آج کیا دیکھ کے بھر آئی ہیں تیری آنکھیں
ہم پہ اے دوست یہ ساعت تو ہمیشہ گزری

میری تنہا سفری میرا مقدر تھی فراز
ورنہ اس شہر ِتمنا سے تو دنیا گزری

شاعر: احمد فراز
آواز: عمران شیرازی


No comments :

No comments :

Post a Comment