Eid ka Din Hai || Eid Special Urdu Poetry




Uncle Uncle Baat Suno Naa! Eid ka Din Hai | Eid Special Urdu/ Hindi Poetry by RJ Imran Sherazi with Lyrics Uncle uncle baat suno na, Lambi gari wale uncle, Eid ka din hai, Meri umar ke saray bache, Rang barange kaprre pehne, Cham cham karte mehnge jootay, Barre barre noton ki eidi, Kitne khush hain, Dekhen mere paaon bareeda, Paaon main yeh tooti chappal, Koi barra na koi eidi, Phir bhi khush hoon, Lekin uncle, Woh jo us deewar ke paas, Ik chaar barrass ki bachi haina, Meri choti behna hai woh, Koorra-daan se us ki khatir, Aik hi paaon ke do jootay, Aur barri kothi se utran ke kaprre laya hoon, Lekin pagli kehti hai ke, Bhaiyya mujh ko kangan la do, Dekhen uncle, Meri jaib main chand rupay hain, Thehren main ginta hon in ko, Dus ka note aur chand ik sikkay, Kul mila kar satra (17) hain, Teen (3) rupay bas de dain mujh ko, Main apni choti behna ko, Dus dus (10) ke do kangan laa doon, Uncle uncle baat suno na, Lambi gari walay uncle.. Poet: Unknown Voice: Imran Sherazi آر جے عمران شیرازی کی آواز میں اردو شاعری انکل انکل بات سُنو ناں لمبی گاڑی والے انکل بات سُنو ناں عید کا دن ہے میری عمر کے سارے بچے رنگ برنگے کپڑے پہنے چم چم کرتے مہنگے جوتے بڑے بڑے نوٹوں کی عیدی کتنے خوش ہیں دیکھیں میرے ہاتھ بریدہ پاؤں میں یہ ٹوٹی چپل کوئی بڑا نہ کوئی عیدی پھر بھی خوش ہوں لیکن انکل ، وہ جو اُس دیوار کے پاس اک چار برس کی بچی ہے ناں میری چھوٹی بہنا ہے وہ کُوڑا دان سے اُس کی خاطر ایک ہی پاؤں کے دو جوتے اور بڑی کوٹھی سے جا کر اُترن کے کپڑے لایا ہوں لیکن پگلی کہتی ہے کہ بھیا مجھ کو کنگن لا دو ۔۔ دیکھیں انکل ! میری جیب میں چند روپے ہیں ٹھہریں میں گنتا ہوں ان کو دس کا نوٹ اور چند اک سِکے کُل ملا کر سترا (17) ہیں تین روپے بس دے دیں مجھ کو میں اپنی چھوٹی بہنا کو دس ، دس کے دو کنگن لا دوں انکل انکل بات سُنو ناں لمبی گاڑی والے انکل بات سُنو ناں ۔۔۔۔ شاعر: نامعلوم آواز: عمران شیرازی


No comments :

No comments :

Post a Comment